0

بلوچستان حکومت کوکوئی مالی بحران نہیں ،گیس کمی کامسئلہ جلد حل ہوگا، وزیراعلیٰ بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو

کوئٹہ: وزیر اعلی بلوچستان عبدالقدوس بزنجو نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران بلوچستان کے مسائل کے حل میں بہت دلچسپی رکھتے ہیں، میرے کہنے پر وزیر اعظم نے اعلی سطحی میٹنگ رکھی جس میں وفاقی وزرا اورسیکرٹریز شریک ہوئے ۔یہ بات انہوں نے نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے کہی۔ میرعبدالقدوس بزنجو نے کہا کہ صوبے کے گیس رائلٹی کی مدد میں پی پی ایل پر 36ارب واجب الادا ہیں وزیراعظم نے اس رقم کی جلد ادائیگی کا وعدہ کیا ہے۔انہوںنے کہا کہ بلوچستان حکومت کو کوئی مالی کرائسسز کا سامنے نہیں ہے بلوچستان کو وفاق سے جو رقم ملتی ہے اس میں آدھے پاکستان کو ترقی دیناممکن نہیں ہمیں آبادی کے لحا ظ سے فنڈز کم ملتے ہیں اس میں اضافہ ہونا چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ امن وامان کا مسئلہ حل کرنا سب کی ذمہ داری ہے لوگوں کو روزگار ملے گا تو امن وامان بہتر ہوجائے گا ۔انہوںنے کہا کہ ابھی تو ہم نے کابینہ بنائی ہے ،صوبے کے مسائل حل کریں گے۔ادھرکوئٹہ سمیت بلوچستان کے مختلف علاقوں میں سوئی گیس پریشر میں کمی کی بازگشت صوبائی اسمبلی میں سنائی دی، حکومتی اور اپوزیشن اراکین اسمبلی سرد موسم میں گیس پریشر میں کمی کے مسئلے پر یک زبان ہوگئے وزیر اعلی بلوچستان عبدالقدوس نے کہا کہ وزیر اعظم نے یقین دھانی کرائی ہے کہ صوبے میں سوئی گیس کی کمی نہیں ہوگی۔ بلوچستان اسمبلی کا اجلاس ڈپٹی اسپیکر سردار بابر موسی خیل کی زیر صدارت منعقد ہوا ،، اجلا س میں نکتہ اعتراض پر اپوزیشن لیڈر ملک سکندر ایڈوکیٹ اور دیگر حکومتی اور اپوزیشن اراکین نے کہا کہ گرمیوں میں لوگ بجلی کی لوڈشیڈنگ کے خلاف احتجاج کرتے رہے اب سردیوں میں سوئی گیس کے پریشر کے خلاف احتجاج کریں گے کوئٹہ کے مختلف علاقوں ،پشین ،مستونگ اور زیارت سے ابھی سے سوئی گیس کے پریشر میں کمی کی شکایات موصول ہورہی ہیں ،صوبائی حکومت سوئی گیس کے پریشر کے حوالے سے وفاقی حکومت سے بات کرے،جس پر وزیر اعلی بلوچستان عبدالقدوس بزنجو نے کہا کہ سوئی گیس پریشر کا معاملے کافی عرصے کا ہے ، میں وزیر اعظم سے بات کی تھی انہوں نے یقین دھانی کرائی ہے کہ صوبے میں سوئی گیس کی کمی نہیں ہوگی ، اگر صوبے میں سو ئی گیس میں کمی ہوئی تو وزیر اعظم سے بات کروں گا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں